پاکستان میں غذائی عدم تحفظ، تعلیم، صحت کا معیار مزید ابتر ہوگیا

عالمی بینک کا کہنا ہےکہ پاکستان میں غذائی عدم تحفظ میں اضافہ، تعلیم اور صحت کا معیار مزید ابتر ہوگیا، اسکول نہ جانے والے بچوں کی تعداد میں مزید اضافہ ہوسکتا۔

عالمی بینک کی رپورٹ میں بتایا گیا کہ نقل و حمل کی لاگت میں اضافے سے اسکول، صحت مراکز، مارکیٹ تک رسائی کے اخراجات بڑھ گئے ہیں، سندھ، پختونخوا، بلوچستان کے 43 دیہی اضلاع میں شدید غذائی عدم تحفظ بڑھنے کا خدشہ ہے۔

رپورٹ کے مطابق غذائی مہنگائی زیادہ ہے، غریب گھرانوں کا 50 فیصد بجٹ خوراک پر خرچ ہوجاتا، غذائی مہنگائی غریب اور نادر گھرانوں پر بری طرح اثر انداز ہورہی۔

اس سے قبل عالمی بینک کے کنٹری ڈائریکٹر نے رواں ماہ کے پہلے ہفتے ملک کی معاشی صورتحال سے متعلق کہا تھا کہ موجودہ حالات میں پاکستان کو سخت فیصلوں کی ضرورت ہے، جس سے مستحکم گروتھ ملے گی، انہوں نے پاکستان میں خصوصی سرمایہ کاری سہولت کونسل کے قیام کو خوش آئند قرار دیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں