کالعدم ٹی ٹی پی کا اہم سرغنہ افغانستان میں فائرنگ سے ہلاک

کابل:کالعدم ٹی ٹی پی کا اہم سرغنہ افغانستان کے علاقے کنڑ میں ہلاک ہو گیا۔ذرائع کے مطابق کالعدم ٹی ٹی پی شوریٰ ملاکنڈ کا رکن عبدالمنان عرف حکیم اللہ افغانستان کے ضلع اسد آباد میں ہلاک ہوا، عبدالمنان کو نامعلوم افراد نے فائرنگ کر کے ہلاک کیا۔ذرائع کا بتانا ہے کہ ہلاک دہشت گرد عبدالمنان باجوڑ میں ٹارگٹ کلنگ، بارودی سرنگ کے دھماکوں میں ملوث تھا، اس کے علاوہ ہلاک دہشت گرد چیک پوسٹوں پر فائرنگ اور بھتہ خوری سمیت دیگر سرگرمیوں میں بھی ملوث تھا۔

ذرائع کے مطابق دہشت گرد عبدالمنان ٹی ٹی پی لیڈر عظمت اللہ محسود کا دست راست تھا، عبدالمنان باجوڑ میں دہشت گرد کارروائیوں کی منصوبہ بندی میں کلیدی کردار ادا کرتا تھا۔ذرائع کا کہنا ہے کہ دہشت گرد عبدالمنان نے 2007 میں ٹی ٹی پی میں شمولیت اختیار کی تھی، عبدالمنان نے سکیورٹی فورسز اور معصوم شہریوں کے خلاف متعددکارروائیوں میں حصہ لیا، دہشت گرد عبدالمنان کے بھائی طارق عرف اسد کا تعلق بھی کالعدم ٹی ٹی پی سے ہے۔

ذرائع کے مطابق پاکستان میں دہشت گردی پھیلانے والی تنظیموں میں ٹی ٹی پی سرفہرست ہے، افغان دہشت گردوں کی آماجگا ہ ہے۔ افغانستان کے علاقے کنڑ، نورستان، پکتیکا، خوست و دیگر علاقوں میں ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں