ورلڈکپ: سری لنکا ماونٹ ایورسٹ سر نہ کرسکا، ساوتھ افریقہ 102 رنز سے فاتح، کئی ریکارڈ بنالئے

ورلڈ کپ 2023ء کے چوتھے میچ میں جنوبی افریقا نے سری لنکا کو 102 رنز سے شکست دی۔ 429 رنز کے مشکل تعاقب کے تعاقب میں سری لنکا کی ٹیم 44 اعشاریہ 5 اوورز میں 326 رنز پر آؤٹ ہوگئی۔

کوئنٹن ڈی کوک، رسی وین ڈر ڈوسن اور ایڈین مارکرم کی دھواں دار بیٹنگ کی بدولت جنوبی افریقا نے ورلڈ کپ کا سب سے بڑا اسکور بنا دیا۔

اس سے قبل 2015 کے ورلڈ کپ میں آسٹریلیا نے افغانستان کے خلاف 6 وکٹوں پر 417 رنز بنائے تھے۔جنوبی افریقی بیٹر ایڈن مرکرم کو شاندار بیٹنگ پر پلیئر آف دی میچ قرار دیا گیا۔

نئی دہلی میں کھیلے جارہے میچ میں پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے جنوبی افریقا نے 5 وکٹوں کے نقصان پر 428 رنز بنائےتھے، جس میں کوئنٹن ڈی کوک، رسی وین ڈر ڈوسن اور ایڈین مارکرم کی شاندار سنچریاں بھی شامل ہیں۔ تنیوں بیٹرز نے بالترتیب 100، 108 اور 106 رنز کی جارحانہ اننگز کھیلیں۔

ایڈن مارکرم نے ورلڈ کپ کی تیز ترین سنچری بنائی، انہوں نے 49 گیندوں پر 3 چھکوں اور 14 چوکوں کی مدد سے سنچری اسکور کی۔

سری لنکا کے دلشان مدوشانکا نے 2، کسون رجیتھا، متھیشا پتھیرانا اور دونیتھ ویلالاگا نے ایک، ایک وکٹ حاصل کی۔

ہدف کے تعاقب میں سری لنکن بیٹرز نے بھی ہمت نہیں ہاری حالانکہ دونوں اوپنرز پتھم اور نسانکا صفر اور 7رنز پر پویلین لوٹ گئے تھے۔

کوشل مینڈس نے 42 گیندوں پر 8 چھکوں اور چار چوکوں کی مدد سے 76 رنز اسکور کیے، پھر چریتھ اسالانکا نے 79 رنز کی اننگز کھیلی۔

اُس کے بعد کپتان داسن شناکا نے 68 رنز بناکر ٹیم کو وننگ ٹریک پرلانے کی کوشش کی، نویں نمبر پر آنے والے راجیتھا نے 33 رنز بنائے، سری لنکا کی ٹیم 45ویں اوور میں 326رنز بناکر 102 رنز سے میچ ہار گئی۔

جنوبی افریقا کے کوئٹزے نے تین کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔ مارکو جانسن، کگیسو ربادا اور کیشو مہاراج نے 2، 2 وکٹیں حاصل کیں۔سری لنکا نے جنوبی افریقا کے خلاف ٹاس جیت کر فیلڈنگ کا فیصلہ کیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں