محکمہ اسکول ایجوکیشن سندھ نے 54 نجی اسکولوں کی رجسٹریشن روک دی

محکمہ اسکول ایجوکیشن سندھ نے 54 نجی اسکولوں کی رجسٹریشن روک دی۔

یہ نجی اسکولز سرکاری قانون کے مطابق اپنی کل انرولمنٹ پر 10 فیصد فری شپ نہیں دے رہے تھے۔

ایڈیشنل ڈائریکٹر رفعیہ جاوید کے مطابق وزیر تعلیم اور سیکریٹری تعلیم سندھ کی ہدایت پر 10 فیصد فری شپ کے قانون پر عملدرآمد کے لیے انسپیکشن ٹیمیں نجی اسکولوں کا دورہ کر رہی ہیں تاکہ مستحق طلبہ اپنے اسکولوں میں اسکالر شپ اور فری شپ حاصل کرسکیں اور اس قانون پر اصل رو کے مطابق عمل ہو سکے۔ اب تک سندھ کے 1154 نجی اسکولوں کا انسپیکشن کیا جاچکا، جہاں 2لاکھ 52ہزار 273 طلبہ زیر تعلیم ہیں اور ان میں سے 25735 طلبہ کو فری شپ دی جا رہی ہے۔

اس سلسلے میں ڈائریکٹوریٹ کی جانب سے ابتدائی رپورٹ محکمہ اسکول ایجوکیشن کی فوکل پرسن ڈاکٹر فوزیہ خان کو بھجوا دی گئی ہے جس کے مطابق 54 نجی اسکولوں کی رجسٹریشن اور رجسٹریشن کی تجدید روکی گئی ہے۔ ان اسکولوں سے کہا گیا ہے کہ جب تک ان کے ادارے 10 فیصد فری شپ کے قانون پر عمل نہیں کریں گے انھیں رجسٹریشن جاری نہیں کی جائے گی۔

مزید براں دیگر رجسٹرڈ نجی اسکولوں سے بھی کہا گیا ہے کہ وہ اس قانون پر عمل کریں بصورت دیگر ان کی رجسٹریشن روکتے ہوئے مزید کارروائی کے طور پر ان کے خلاف جرمانے کیے جائیں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں