رشتے، انا اور عزت نفس (بنت اخلاق)

میں نے بہت دفعہ لوگوں کو کہتے سنا ہے کہ کسی رشتے کو بچانے کے لئے اپنی انا اور عزت نفس کو ختم کرنا بھی پڑے تو انسان کو دیر نہیں کرنی چاہیئے کیونکہ رشتے، انا اوت عزت نفس سے زیادہ اہم ہوتے ہیں. میں اس بات سے اتفاق رکھتی ہوں مگر سو فیصد نہیں. رشتے بیشک انا سے زیادہ اہم ہیں مگر عزت نفس اور رشتوں کا آپس میں بہت گہرا تعلق ہے.
انا انسانی رشتوں کو کمزور کرتی ہے چاہے وہ کوئی بھی رشتہ کیوں نہ کو مگر جن رشتوں میں عزت نہ ہو وہ رشتے ہی کمزور ہوتے ہیں.
جو انسان اپنی انا کو اپنے رشتے سے زیادہ اہمیت دیتا ہے وہ آخر میں پچھتاتا ضرور ہے مگر جو انسان کسی رشتے کے لئے اپنی عزت گنوا دیتا ہے اس کے ہاتھ بھی پچھتاوے کے سوا کچھ نہیں آتا.
انا ہمیشہ پیار کی ڈور پر ضرب لگاتی ہے مگر جس رشتے میں عزت نفس پر ضرب لگائی جاتی ہو وہ بھی پیار کی ڈور کو توڑ دیتی ہے.
رشتے اور انا ایک جگہ اکھٹے نہیں رہ سکتے مگر عزت نفس کے بغیر بھی زندگی میں رشتوں کی کوئی جگہ نہیں بچتی.
جو انسان آپ کی عزت کرتا ہے وہ آپ سے پیار بھی اتنا ہی کرتا ہے اور جو انسان آپ کی عزت پر ضرب لگانا برا نہیں سمجھتا وہ پھر کسی بھی حد تک جا سکتا ہے کیونکہ اس کے لئے آپنا آپ اور اپنی سوچ آپ کی عزت اور بات سے زیادہ اہم ہے.
تو اپنی انا کو رشتوں کے بیچ حائل مت ہونے دیں مگر رشتوں کی ڈور کی ساتھ ساتھ اپنی عزت نفس کی بھی قدر کیجئے کیونکہ جب آپ خود اپنی عزت نہیں کریں گی تو کوئی اور نہیں کرے گا. جب آپ خود کو اہمیت نہیں دیں گی تو کوئی اور نہیں دے گا.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں