50 سیٹوں والا کس منہ سے فتح کا اعلان کررہا؟۔ عمران خان

بانی چیئرمین تحریک انصاف، سابق وزیراعظم عمران خان نے پیغام دیا ہےکہ وفاق، پنجاب اور پختونخوا میں حکومت بنائیں گے، قوم کے ساتھ جو ہورہا، اس سے زیادہ نہیں ہونا چاہیے، جن حلقوں میں نتائج تبدیل کئے گئے، اُمیدوار کل نکلیں اور پُرامن احتجاج کریں۔

جیل میں وکلا عمیر نیازی اور بیرسٹر سلمان صفدر نے عمران خان سے ملاقات کی، میڈیا سے گفتگو عمیر نیازی نے بتایا کہ عمران خان نے قوم کو الیکشن شاندار نتائج پر مبارکباد دی اور کہا کہ قوم نظرئیے اور جمہوریت کے ساتھ کھڑی ہے، جس طرح لوگوں نے ووٹ کاسٹ کیا، یہ 1970 سے زیادہ لوگ باہر آئے ہیں۔

عمران خان نے سپریم کورٹ سے اپیل کی کہ قوم کے ساتھ جو ہورہا ہے، اس سے زیادہ نہیں ہونا چاہیے، جمہوری عمل میں ووٹ کی عزت ہے، ووٹ چوری ہوا ہے، اس کے خلاف احتجاج کریں۔

عمران خان نے کہا ہےکہ ہماری معیشت زمین بوس ہوچکی، سیاسی عدم استحکام نہیں ہونا چاہیے، پاکستان کو بند گلی میں نہ لیکر جائیں، پری پول دھاندلی اور اداروں کو استعمال کیا گیا، نواز شریف نے ہمیشہ حکومت کو بینک کرپٹ کیا، مکس اچار کے ساتھ حکومت نہ بنانے دیں، 50 سیٹوں والا کیسے فتح کا اعلان کرسکتا ہے؟ پی ٹی آئی کے مینڈیٹ کا احترام کیا جائے۔

بیرسٹر سلمان صفدر کا کہنا تھا کہ عمران خان بالکل فریش تھے، تفصیلی ہدایات دی ہیں، 7 ماہ ہوچکے، انہوں نے ایک دن بھی نہیں کہا کہ کب باہر آؤں گا۔

سلمان صفدر نے بتایا کہ اب دن آچکے، عمران خان کو عوام میں آنا چاہیے، تمام مقدمات ریت کا ڈھیر ثابت ہوں گے، بانی پی ٹی آئی کو تین مقدمات کا دکھ ہوا ہے، ایک ظل شاہ قتل کیس، کرپشن کیس اور عدت میں نکاح کیس۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں