عمران خان بھی 9 مئی واقعات کی انکوائری چاہتے، لطیف کھوسہ

تحریک انصاف کے بانی، سابق وزیراعظم عمران خان کے وکیل لطیف کھوسہ نے کہا ہے کہ پہلے یہ تعین کیا جائے کہ حساس تنصیبات پر حملہ کس نے کیا؟

لاہور میں نجی یونیورسٹی کی یوتھ کانفرنس سے خطاب میں سردار لطیف کھوسہ نے کہا کہ عمران خان نے خود مجھ سے کہا کہ 9 مئی واقعات کی انکوائری کروائیں۔

انہوں نے کہا کہ ڈاکٹر یاسمین راشد تو 9 مئی کو کارکنوں کو روک رہیں تھیں مگر کچھ لوگ انہیں اندر بلا رہے تھے۔

وکیل نے مزید کہا کہ 130 لوگ آج بھی کسمپرسی میں ہیں، جن میں خواتین بھی شامل ہیں، پوچھتا ہوں کیا ہم اپنی بہنوں اور بیٹیوں کے ساتھ یہ سلوک کر رہے ہیں؟

اُن کا کہنا تھا کہ سویلینز کا ٹرائل کرنے کیلئے ملٹری کورٹس کہاں سے آئیں؟ یہ تو آئین کے خلاف ہے۔

لطیف کھوسہ نے یہ بھی کہا کہ ایک بھی کیس اس لائق نہیں کہ جس کی بنیاد پر عمران خان کو پابند سلاسل رکھا جائے۔

انہوں نے کہا کہ القادر یونیورسٹی کا 190 ملین سیدھا عدالت کے اکاؤنٹ میں آیا، یونیورسٹی ٹرسٹ پر بنی ہے، ایک بھی پیسہ کسی پر استعمال نہیں ہوا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں