کیماڑی پورٹ ایریا میں غیرقانونی پارکنگ امن وامان کیلئے سنگین خطرہ

کراچی میں امن وامان کی مخدوش صورتحال کے باوجود ضلع کیماڑی میں بندرگارہ جیسے حساس علاقے میں مچھلی مارکیٹ جیٹی نمبر 1 کراچی گیٹ وے کے سامنے والی سڑک بہادر خان ولد ولایت خان کی غیرقانونی پارکنگ کا مرکز بن گئی ہے-

جہاں یومیہ بنیاد پر سینکڑوں موٹر سائیکلیں و گاڑیاں پارک کروائی جارہی ہیں، جس کی مد میں لاکھوں روپے کالا دھن کمایا جارہا ہے، غیر قانونی پارکنگ سے جہاں ٹریفک جام معمول ہے، وہیں علاقہ مکین بالخصوص سیرو تفریح کیلئے جزیرہ بابا بھٹ، بھٹ آئی لینڈ اور منوڑہ جانے والی فیملیز کو بھی شدید ذہنی اذیت کا سامنا کرنا پڑرہا ہے-

سب سے اہم اور توجہ طلب غیرقانونی پارکنگ سے دہشتگردی اور تخریب کاری کے خدشات بھی بڑھ گئے ہیں، جس سے پورٹ ایریا، دفاتر اور اطراف کی آبادی کو شدید خطرات لاحق ہیں-

غیرقانونی پارکنگ کے سرپرست بہادر خان کی انفارمیشن رپورٹ بھی آچکی، جس کا نمبر 316 ہے، IR میں خدشہ ظاہر کیا گیا ہےکہ غیرقانونی پارکنگ کی آڑ میں کوئی بھی دہشتگرد یا تخریب کار باآسانی کارروائی کرسکتا ہے، IR میں سفارش کی گئی کہ امن و امان کے پیش نظر غیرقانونی پارکنگ فوری ختم کی جائے تاہم اس کے باوجود بہادر خان کے خلاف کوئی ایکشن ہوا اور نہ ہی غیر قانونی پارکنگ کا خاتمہ ہوسکا۔

ذرائع کے مطابق تھانہ جیکسن کے سب انسپکٹر چوہدری زاہد اور ASI شہر بہادر ہفتہ وار بھاری نذرانہ وصول کررہے ہیں، جس کے بدلے بہادر خان اور غیرقانونی پارکنگ کو تحفظ فراہم کیا جارہا ہے۔ اس کے علاوہ ابراہیم، طفیل، امان بھی غیرقانونی پارکنگ مافیا کے کارندے ہیں جبکہ KMC اور DMC کے کرپٹ افسران بھی بہادر خان سے اپنا حصہ وصول کررہے ہیں۔

علاقہ مکینوں نے چیف جسٹس سندھ ہائیکورٹ، وزیراعلیٰ سندھ، آئی جی سندھ اور ایس ایس پی کیماڑی سے مطالبہ کیا کہ غیرقانونی پارکنگ کا خاتمہ کرکے مافیا، کارندوں اور سہولت کاروں کے خلاف کارروائی کی جائے۔واضح رہے اس اہم سڑک پر پارکنگ پر مکمل طور پر پابندی ہے، اس کے باوجود مافیا جعلی لیٹرز اور پولیس کی سرپرستی میں غیرقانونی پارکنگ چلارہی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں