موڈ بدلا ، ہوا بدلی اور فیصلے بدل گئے، گورنرسندھ

گورنرسندھ کامران خان ٹیسوری نے کہا ہے کہ یہ وطن بڑی قربانیوں کے بعد ملا ہے ، عوام معاشی بحران سے نکلنا چاہتے ہیں ، ایسے ملکوں میں کون سرمایہ کاری لے کر آئے گا جہاں صبح و شام فیصلے بدلتے ہیں ، حکومت میں ہوں تو اچھا کہتے ہیں جب حکومت میں نہ ہوتو برا کہتے ہیں ،عدلیہ پر مجھ سمیت سب کو اعتماد ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے اسلام آباد میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم ، آرمی چیف، ایس آئی ایف سی سب معاشی بحران ختم کرنے کے لئے سرگرم ہیں

انہوں نے کہا کہ وطن ہے تو ہم ہیں سرحدیں محفوظ ہیں تو ہی سرمایہ کاری آتی ہے ،جس کی مرضی ہوتی ہے اپنے سر سے اتار کر اسٹیبلشمنٹ پر ڈال دیتا ہے ، آج سیاہ دن ہے کہ ایسے فیصلے آئے ، فیصلے ان کے حق میں آئے جنہیں امید بھی نہیں تھی۔ آج عدلیہ کی طرف سے ایک فیصلہ آیا ہے جس پر قوم پریشان ہے ،عدلیہ کا آج کا فیصلہ قوم کے لئے لمحہ فکریہ ہے اورجن کے حق میں صبح شام فیصلے آرہے ہیں وہ بھی پریشان ہیں ۔

ایک اور سوال کے جواب میں گورنرسندھ نے کہا کہ ہمارے یہاں جس کا دل چاہتا ہے اسٹیبلشمنٹ اور افواج پاکستان کو سیاست میں گھسیٹ لیتا ہے جن چیزوں کا دور، دور تک واسطہ نہیں ان پر بھی بات کی جارہی ہے ، اعلیٰ عدلیہ کو اپنے فیصلوں پر نظر ثانی کرنا پڑے گی۔ یقین جانیں آج کا سوال یہی ہے کہ موڈ بدلا ، ہوا بدلی اور فیصلے بدل گئے اور آج کا جواب یہی ہے کہ لاڈلوں کے فیصلے گھنٹوں میں آرہے ہیں اور عوام ، غریبوں کے فیصلے برسوں میں نہیں آرہے ہیں۔ایک سوال کے جواب میں گورنرسندھ نے کہا کہ جب پاکستان معاشی خوشحالی کی طرف بڑھ رہا ہوتا ہے اور جب جب سرمایہ کاری آنا شروع ہوجاتی ہے تو کچھ بیرونی طاقتیں اپنا اثردکھانا شروع کردیتی ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں