جگرمراد آبادی ( 6اپریل 1890 تا 9 ستمبر 1960)

علی سکندر نے جب احساس کولفظوں کی مالا میں ڈھالا،،تودنیا نے انھیں جگرمراد آبادی کے نام سے یاد کیا۔۔

جگر6 اپریل 1890ءکومراد آباد میں پیدا ہوئے۔۔ان کے کلام میں حسن و عشق اور کیف و سرور رچا ہوا تھا
انکا ترنم کبھی انکے کلام کو صحرا کے سکوت میں بدل دیتا۔
کبھی ان کے لفظوں کی چہچہاہٹ جیسے آسمان پرپنچھیوں کی صدا سناتی۔۔
جگرمراد آبادی کا ترنم اس درجہ والہانہ اوردل دوز تھا کہ برصغیرکے مقبول ترین شاعرکہلائے۔
جگر کی شاعری کے تین مجموعے داغ جگر، شعلہ طور اور آتش گل یادگار ہیں۔

آپ کو سب سے زیادہ نظمیں تخلیق کرنے پر ایوارڈ بھی ملا۔
جگر مراد آبادی نے 9 ستمبر 1960 کو بھارتی ریاست یوپی کے شہرگونڈہ میں وفات پائی اور وہیں آسودہ خاک ہیں۔۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں