عمران خان 3 ماہ بعد واپس آرہے ہیں۔پیر پنجر کی پیشگوئی

22 مارچ کوایک انٹرویومیں پیر پنجر کا کہنا تھا کہ عمران خان اگلے کچھ دنوں میں عدم اعتماد کی بنا پر حکومت کا حصہ نہیں رہ سکیں گے۔اور ن لیگ سے کوئی وزیراعظم بنے گا۔جبکہ عثمان بزدار بھی ہٹ وکٹ ہوں گے۔ ان کی یہ پیشنگوئی سچ ثابت ہوچکی ہے۔۔اسی انٹرویو میں آگے ان کا کہنا تھا کہ وزارت عظمی سے ہٹنے کے بعدعمران خان ملک پر چھا جائیں گے اور صرف تین ماہ بعد ہی اقتدار میں ان کی واپسی ہوجائے گی۔۔

اس انٹرویو میں ان کا کہنا تھا عمران مخالف قوتیں ملک کیلئے ٹھیک نہیں کررہی ہیں۔پی ڈی ایم صرف فتور ڈال رہی ہے۔ان کی فائلوں کا انبار ان ہی کے سرپر گرنے والا ہے۔ عمران خان کو پھر آتا دیکھ رہا ہوں اگلے تین ماہ میں۔ پنجاب میں بڑا جھگڑا ہوگا۔ یہ  جھگڑا بڑھے گا اور عمران خان کو دوبارہ موقع ملے گا۔ان کا کہنا تھا کہ نئے الیکشن 2023 میں نہیں بلکہ 2022 میں ہی ہوں گے۔ ملک صدارتی نظام کے رستے پر چل پڑا ہے۔پیر پنجر نے زور دے کر کہا کہ  ملک میں صدارتی نظام ہر صورت آکر رہے گا۔

ان کا کہنا تھا نواز شریف 2022 میں آسکتے ہیں۔ لیکن نواز اور مریم کا کردار سیاست میں نظرنہیں آرہا۔

انہوں نے خاص طور پر کہا کہ مسئلہ کشمیر عمران خان کے دور میں حل ہوگا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں