تھانوں کو براہ راست بجٹ ملے گا،آئی جی سندھ

کراچی:آئی جی سندھ غلام نبی میمن نے کہا ہے کہ صوبے کے تمام ایس ایچ اوز کو خودمختار بنایا جا رہا ہے تھانوں کو براہ راست بجٹ ملے گا۔ انسپکٹر جنرل پولیس آف سندھ غلام نبی میمن نے میڈیاسے خصوصی گفتگوکرتے ہوئے کہا کہ پولیس میں کرپشن کے خاتمے، محکمے میں جدت لانے اور عوامی فلاحی ادارہ بنانے کے لیے سندھ حکومت سے جو مطالبات کیے تھے انہیں منظور کر لیا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے سندھ پولیس کے 484 تھانوں کے لیے ساڑھے چار ارب کا بجٹ مانگا ہے جبکہ تھانیداروں کو خودمختار کرنے جا رہے ہیں جب کہ سندھ حکومت بھی چاہتی ہے کہ پولیس کا علیحدہ بجٹ ہونا چاہیے۔غلام نبی میمن نے کہا کہ اور پولیس کو با اختیار بنانے کے مطالبات تسلیم پہلے سینئر افسران کے پاس پولیس اسٹیشنز کے لیے مجموعی بجٹ جاتا تھا جو ایس ایچ اوز تک پہنچ نہیں پاتا تھا اور اس کے نتیجے میں بدعنوانی ہوتی تھی، تاہم اب یہ بجٹ براہ راست پولیس اسٹیشنز میں جائے گا۔

موبائل کا پٹرول، گاڑیوں کی مرمت، تھانے کو چلانا، تفتیش اور دیگر اخراجات کے لیے پیسوں کی ضرورت ہوتی ہے جس میں اب تھوڑی بہتری نظر آئے گی۔غلام نبی میمن کے مطابق بجٹ میں پولیس ویلفیئر کے لیے 5 ارب روپے کا پیکیج رکھا جارہا ہے۔ پہلے میڈیکل کی سہولت نہیں تھی، علاج کروا کر بل جمع کروانا پڑتا تھا اور زیادہ تر کو پیسے نہیں ملتے تھے اور نہ ہی اتنے پیسے ہوتے تھے، تاہم اب سندھ پولیس کے سپاہی سے آئی جی تک سالانہ 10 لاکھ کا میڈیکل کروا سکے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں