anti-people decisions

نگراں‌حکومت عوام دشمن فیصلے کرنے سے باز رہے، حافظ‌نعیم

کراچی:  امیرجماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن نے کہا ہے کہ نگراں حکومت عوام دشمن فیصلے کرنے سے باز رہے۔

حافظ نعیم الرحمن نےکراچی سمیت ملک بھر میں بجلی کے نرخوں میں مزید 3.28روپے اضافے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ نگراں حکومت بدترین مہنگائی اور مسائل میں گھرے ہوئے عوام کو کوئی ریلیف دینے کے بجائے ان پر مسلسل پیٹرول اور بجلی کے بم گرا رہی ہے۔یہ بات انہوں نے اپنے ایک بیان میں کہی۔

حافظ نعیم الرحمن کا کہنا تھا کہ طبقہ اشرافیہ کی مراعات ختم کرنے، جاگیرداروں پر ٹیکس لگانے کے بجائے سارا بوجھ عوام پر ڈال رہی ہے ، اس اضافے سے عوام کی مشکلات و پریشانیاں مزید بڑھ جائیں گی۔

ان کا کہنا تھا کہ نیپرا نوٹیفیکیشن کے مطابق چوتھی سہ ماہی ایڈجسٹمنٹ کی مد میں اضافے سے صارفین کو 6ماہ کی اضافی ادائیگیاں کرنا پڑیں گی اور ان پر 159ارب روپے کا اضافی بوجھ پڑے گا جو عوام کے ساتھ سراسرظلم وزیادتی ہے۔ عوام یہ اضافی بوجھ برداشت نہیں کر سکیں گے، نگراں حکومت بجلی کے نرخوں میں اس اضافے سمیت عوام دشمن فیصلوں سے باز رہے اور عوام کو ریلیف دینے کے لیے بجلی، گیس اور پیٹرول کی قیمتیں کم کرے تاکہ مہنگائی اور دیگر اشیاء کی قیمتیں بھی کچھ کم ہو سکیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں