الجزائر میں26 سال قبل اغوا ہونے والا لڑکا پڑوسی کے گھر سے بازیاب

الجزائر میں 26 سال قبل اغوا ہونے والا لڑکا پڑوسی کے گھر سے بازیاب ہوگیا۔الجزائری شہری عمر بن ع±مران جو کہ 26 سال قبل اسکول جاتے ہوئے اغوا ہوئے تھے، انہیں پولیس نے شہرڈجلفامیں اپنے گھر سے صرف 100 میٹر دور پڑوسی کے گھر کے تہہ خانے سے بازیاب کروالیا۔عمر کو جب اغوا کیا گیا تھا اس وقت ان کی عمر محض 17 سال تھی اور اب ان کی عمر 45 سال ہے۔

دجلفا شہر کے حکام کا کہنا ہے کہ عمر کے مشتبہ اغواکار 66 سالہ شخص کو گرفتار کرلیا ہے جو کہ ایک سول سرونٹ ہے اور گھر میں اکیلے رہتا ہے۔حکام کا بتانا ہے کہ عمر کے گھر والوں نے کچھ وقت قبل سکیورٹی اداروں کو ملزم سے متعلق شک کی بنیاد پر اطلاع دی تھی، ملزم کے بہن بھائیوں نے ایک سوشل میڈیا پوسٹ میں ملزم کے اغوا کی وارداتوں میں ملوث ہونے کے بارے میں بتایا تھا، جس کے بعد الجزائر کی سکیورٹی ایجنسی نے عمر کے گمشدہ ہونے کے کیس کو دوبارہ کھول کر تحقیقات کا آغاز کیا۔

تحقیقاتی اداروں نے جب مشتبہ شخص کے گھر کی تلاشی لی تو وہاں انہیں گھاس سے ڈھکا ایک دروازہ ملا جس کے نیچے ایک تہہ خانہ بنا ہوا تھا جہاں عمر کو رکھا گیا تھا، ایجنسی کے اہلکاروں نے ملزم کو فرار ہونے کی کوشش کرتے ہوئے گرفتار کیا۔رپورٹ کے مطابق عمر کے اغوا ہونے کے ایک ماہ بعد ان کا پالتو کتا جو عمر سے بہت مانوس تھا اس نے مشتبہ پڑوسی کے گھر کے باہر ٹہلنا شروع کردیا تھا مگر پھر کچھ وقت بعد ہی ان کے گھر کے سامنے سے کتے کی لاش ملی جسے زہر دے کر مارا گیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں