دلیر ہوں، دلاور نہیں، سائفر کیس میں جج کے ریمارکس

آفیشل سیکریٹ ایکٹ کی خصوصی عدالت کے جج نے کہا ہےکہ جیل میں سماعت کے دوران چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان سے کہا تھا کہ سائفر کیس کا فیصلہ میرٹ پر دوں گا، میں دلاور نہیں، دلیر ہوں۔ ہائیکورٹ میں سائفر کیس کی خصوصی عدالت کا دائرہ اختیار چیلنج ہونے کے باعث چیئرمین پی ٹی آئی اور شاہ محمود قریشی کی ضمانت کی درخواستوں پر کوئی پیش رفت نہ ہوسکی۔ آفیشل سیکرٹ ایکٹ کی خصوصی عدالت کے جج ابوالحسنات محمد ذوالقرنین نے سائفر کیس میں چیئرمین پی ٹی آئی اور شاہ محمود قریشی کی ضمانت کی درخواست پر ان کیمرہ سماعت کی۔دوران سماعت پراسیکیوٹر کی جانب سے پی ٹی آئی لیگل ٹیم کی اسلام آباد ہائیکورٹ میں دائر درخواست پر اعتراض اٹھایا گیا۔ عدالت نے ریمارکس دیئےکہ ہائیکورٹ میں آپ کی طرف سے جیل ٹرائل اور عدالتی دائرہ اختیار کو چیلنج کیا گیا، پہلے اس پر فیصلہ آنے دیں، پھر ضمانت کا معاملہ دیکھ لیں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں